حضرت الاستاذ نے قرآن مجید اور ابتدائی اُردو وغیرہ کی تعلیم اپنی دادی ، والدہ اور پھوپھامولانا وجیہ احمد مرحوم سے حاصل کی ، فارسی اورعربی زبان کی ابتدائی کتابیں والد ماجد سے پڑھیں ، نیز ایک دو سال مدرسہ قاسم العلوم حسینیہ دوگھرا ( ضلع دربھنگہ ) میں بھی زیر تعلیم رہے ، یہاں حضرت مولانا عبدالحمید قاسمی ( نیپال ) آپ کے خاص استاذ تھے ، متوسطات سے دورۂ حدیث تک جامعہ رحمانی مونگیر میں کسب فیض کیا ، جہاں امیر شریعت رابع حضرت مولانا سید منت اﷲ رحمانی کی آپ پر خصوصی شفقت تھی ، یہاں آپ نے حضرت مولانا سید شمس الحق صاحب مدظلہ( شیخ الحدیث جامعہ رحمانی مونگیر ) ، حضرت مولانا اکرام علی صاحب ( حال شیخ الحدیث جامعہ تعلیم الدین ڈابھیل ، گجرات ) ، حضرت مولانا حسیب الرحمن صاحب ( حال شیخ الحدیث دارالعلوم حیدرآباد ) ، حضرت مولانا فضل الرحمن قاسمی ( حال نائب شیخ الحدیث دارالعلوم سبیل السلام حیدرآباد ) اور حضرت مولانا فضل الرحمن رحمانی ( حال شیخ الحدیث جامعہ اسلامیہ بھٹکل ) نیز دوسرے کہنہ مشق مدرسین سے استفادہ کیا ۔      

 

 

Go to top